نعت

پیشکش :ابوسعدی
صلی اللہ علیہ وسلم

احمدِ مرسل، فخرِ دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم
مظہرِ اوّل، مرسلِ خاتم صلی اللہ علیہ وسلم
جسم مزکی، روحِ مصور، قلب مجلی، نورِ مقطر
حُسنِ سراپا، خیرِ مجسم، صلی اللہ علیہ وسلم
طینت جس کی سب سے مطہر، بعثت جس کی سب سے مؤخر
خلقت جس کی سب سے مقدم، صلی اللہ علیہ وسلم
جس کی ہر اول فوجِ سلیماں، جس کے منادی موسیٰ عمراں
جس کے مبشر عیسیٰ مریم، صلی اللہ علیہ وسلم
جس کا نام اُچھالے داور آپ رفعنالک فرما کر
بزمِ تجلی جس کا مخیم، صلی اللہ علیہ وسلم
جتنے فضائل، جتنے محاسن، ممکن میں ہوسکتے تھے ممکن
حق نے کیے سب اس میں فراہم، صلی اللہ علیہ وسلم
علمِ لدنی، شانِ کریمی، خلقِ خلیلی، نطقِ کلیمی
زہدِ مسیحا، عفتِ مریم، صلی اللہ علیہ وسلم
آپ اگر مقصود نہ ہوتے، کون و مکاں موجود نہ ہوتے
اور موجود نہ ہوتے آدم، صلی اللہ علیہ وسلم
اوجِ شرف کا بدر وہی ہے، بزمِ رسل کا صدر وہی ہے
بدرِ منور، صدرِ مکرم، صلی اللہ علیہ وسلم
صدرِ اُمم، سلطانِ مدینہ، وہ جس کے کفِ پا کا پسینہ
گل کدۂ فردوس کی شبنم، صلی اللہ علیہ وسلم

(مولوی اقبال احمد خان سہیل)

حصہ