پاس ورڈ کیسے رکھیں ،تحقیق کی روشنی میں

Print Friendly, PDF & Email

ایک نئی تحقیق کے مطابق12345 سمیت بہت آسانی سے ہیک ہوجانے والے پاس ورڈ یعنی 123456789، password اور iloveyou اب بھی پاس ورڈ کے طور پر استعمال ہورہے ہیں۔
2020 میں کئے گئے ایک سروے کے مطابق دنیا میں اب بھی ایسے 2,543,285 افراد ہیں جو 123456 کو بطور پاس ورڈ استعمال کررہے ہیں۔ یہ سروے پاس ورڈ پر نظر رکھنے والی ایک کمپنی نورڈ پاس نے کیا ہے۔ کمپنی کےمطابق یہ تمام پاس ورڈ بہت آسان ہے اور سیکنڈوں میں ہیک ہوجاتی ہے ہیکرز اکاؤنٹ حاصل کرسکتےہیں۔نورڈ پاس میں سائبرسیکورٹی کے ماہرین نے بتایا کہ ایسے لوگوں کو پاس ورڈ تبدیل کرنے کی بار بار درخواست کی جاتی ہے لیکن وہ اس پر دھیان نہیں دیتے اور سال 2019 کی طرح اس سال بھی دنیا بھر میں یہ آسان پاس ورڈ والے اکاؤنٹ استعمال ہورہے ہیں۔
نورڈ پاس کمپنی نے اپنی تحقیق میں بتایا کہ اس سروے میں تھرڈ پارٹی نے کل 275,699,516 پاس ورڈ دیکھے اور ان میں بہت کمزوری دیکھی گئی۔ اس سال کے دس آسان ترین پاس ورڈ میں picture1 اور senha شامل ہیں جبکہ پرتگالی زبان میں پاس ورڈ کو senha ہی کہا جاتا ہے۔نورڈ پاس کا ایک اور مشورہ ہے کہ ہر تین ماہ بعد اپنا پاس ورڈ بھی ضرور تبدیل کیجئے جن میں اپر اور لوور کیس بھی شامل ہیں۔

Share this: