کووڈ سے صحت یابی کے بعد ورزش مفید

Print Friendly, PDF & Email

برطانیہ میں نیشنل انسٹی ٹیوٹ فار ہیلتھ ریسرچ سے وابستہ لیسٹر تحقیقی مرکز نے کووڈ19 کے کئی مریضوں کو 6ہفتے تک ورزش سے گزارا تو اس کے حیرت انگیز فوائد دیکھنے میں آئے۔ ورزش کرنے والے افراد میں نظامِ تنفس کی مضبوطی، تھکاوٹ میں کمی اور دماغی صلاحیت میں بہتری بھی نوٹ کی گئی۔ یہ تحقیق جرنل آف کرونک رسپائریٹری ڈیزیز میں شائع ہوئی ہے۔
اس ضمن میں کورونا سے متاثر ہونے 30 مریضوں کو کورونا سے صحت یاب ہونے کے بعد ہفتے میں دو مرتبہ ورزش کی کلاسیں دی گئیں اور انہیں ہسپتال میں بلاکر مختلف ورزشیں کروائی گئیں۔ ان میں ایئروبِک ورزشیں، ٹریڈ مل پر دوڑیں، بازو اور ٹانگوں کی ورزشیں اور دیگر طرح کی ورزشیں شامل ہیں۔6 ہفتے میں تمام شرکا نے ورزش میں بہتری دکھائی اور انہیں اسکور کے نمبر دیئے گئے۔ اس طرح تھکاوٹ اور غنودگی میں بہتری ہوئی۔ اس سے قبل اکثر مریضوں میں جسمانی اور نفسیاتی عوارض بھی تھے جو ان کے روزمرہ معمولات کو شدید متاثر کررہے تھے۔ بعض افراد سونگھنے اور چکھنے کی حس کھو چکے تھے، اور کئی افراد کو سانس لینے میں بھی دقت محسوس ہورہی تھی۔ اکثر حالات میں جب مریضوں کو ورزش کرائی جاتی ہے تو وہ تھکاوٹ اور کمزوری محسوس کرتے ہیں۔ لیکن کووڈ مریضوں میں اس طرح کے منفی آثار نہیں دیکھے گئے جو ایک امید افزا بات بھی ہے۔

Share this: