اطہرعلی ہاشمی

19 مراسلات 0 تبصرے

’’اطراف‘‘ کا قضیہ

ہمیں ماہر لسانیات ہونے کا دعویٰ تو کبھی نہیں رہا، بس کبھی کبھار ’’پنگا‘‘ لے لیتے ہیں۔ گزشتہ شمارے میں ہم نے لکھا تھا...

’’مڈھ بھیڑ ‘‘ یا ’’مٹھ بھیڑ؟‘‘۔

ایک ادبی رسالے میں افسانے کا عنوان دیکھا ’’مٹھ بھیڑ‘‘۔ ہم اس کو آج تک مڈبھیڑ پڑھتے رہے تو تجسس ہوا کہ صحیح کیا...

تحقیقی مجلّہ کی تحقیق

شش ماہی تحقیقی مجلہ ’’تحقیق ‘‘ شعبہ اردو‘ جامعہ سندھ جام شورو کا بڑا دقیع مجلہ ہے‘ جس میں بہت قیمتی مضامین شائع ہوتے...

مَدِس اور مُقدّس

امریکی صدر کی طرف سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت بنانے کے اعلان کے بعد ذرائع ابلاغ میں بیت المقدس کا نام...

شُکیب‘ شَکیب یا شِکیب

ایک بہت بزرگ اور عالم شخصیت نے ایک محفل میں بتایا کہ شکیب میں شین پر پیش ہے یعنی شُکیب۔ ہم تو اب تک...

محض تفننِ طبع

محمد طارق غازی ایک بڑے صحافی ہیں۔ اردو، عربی، فارسی اور انگریزی پر عبور حاصل ہے۔ انہوں نے اپنی پہچان بڑے زوروں سے منوائی...

سہ ماہی ’’لوح‘‘

ممتاز احمد شیخ بظاہر تو ایک فرد ہیں لیکن وہ جو کام کر رہے ہیں اس سے لگتا ہے کہ جن ان کے قابو...

یہ ہراسگی ہراساں کررہی ہے

حیدرآباد (سندھ) سے ایک صاحب فرحت سعیدی نے صحیح پکڑ کی ہے کہ گزشتہ کالم میں آپ نے کمالی صاحب کو اہلِ علم اور...

ساتھی کے 40سال‘ جدوجہد کی روشن مثال

ماہنامہ ساتھی 40برس کا ہوگیا۔ یہ صرف بچوں ہی کا پسندیدہ نہیں بلکہ بڑوں کا بھی ساتھی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اس رسالے...

خبر لیجے زباں بگڑی … اوچھے کا تیتر

معین کمالی صاحب بڑے سینئر صحافی اور اہلِ علم و اہلِ قلم ہیں۔ گزشتہ دنوں انہوں نے روزنامہ ’’امت‘‘ میں اپنے مضمون کو ’’ایتر...
پرنٹ ورژن
Friday magazine