Friday magazine

اطہرعلی ہاشمی

90 مراسلات 0 تبصرے

تار۔ مذکر یا مونث؟

اردو میں ہم ایسے کئی الفاظ بے مُحابا استعمال کرتے ہیں جن کا مفہوم اور محل واضح ہوتا ہے لیکن کم لوگ جن میں...

رضا علی عابدی کی تشویش

جیسے پچھلے کالم میں لکھا تھا کہ عربی میں ’مَحبت‘ کے میم پر زبر ہے جیسا کہ سورہ طٰہٰ میں ہے کہ ’’میں نے...

تہ بند، تہمد اور تہمت

محترم پروفیسر عنایت علی خان نے اپنے فکر انگیز مضمون ’’کل شب جہاں میں نکلا‘‘ (4 دسمبر) میں تہ بند یا تہمد کے لیے...

گندہ دھندہ

آئیے، آج پہلے اپنا جائزہ لیں۔ منگل 27نومبر کے جسارت کے ادارتی صفحے کے ایک مضمون کی سرخی ہے ’’گندہ ہے پر دھندہ ہے...

یوٹرن یا رجعت قہقری

آج کل ذرائع ابلاغ میں یو۔ٹرن کا بڑا چرچا ہے، اور ہر ایک اپنی سمجھ کے مطابق اس کے معانی نکال رہا ہے۔ اس...

شہرِ ابلاغ میں لکڑ ہارے

شاعر نے کہا تھا : جانے کن جنگلوں سے در آئے شہرِ تنقید میں لکڑہارے یہ کسی نقاد پر شاعر کی برہمی کا اظہار تھا۔ شعر غالباً...

یہ ’عاصیہ‘ کون ہے؟

آجکل توہینِ رسالت کے حوالے سے عدالتِ عظمیٰ کے فیصلے کا چرچا ہر طرف ہے۔ لیکن ملعونہ کا نام کیا ہے، آسیہ یا عاصیہ؟...

’’کام کا دائرۂ کار‘‘

کہتے ہیں کہ خطائے بزرگاں گرفتن خطا است، لیکن اب ہم خود بزرگ ہوگئے ہیں اس لیے کوئی ہرج نہیں۔ یہ ہرج بھی عجیب...

راز افشاں ہوگئے!۔

گزشتہ دنوں جسارت کے صفحہ اوّل پر ایک خبر میں ’’استفادہ حاصل کرنا‘‘ شائع ہوا ہے۔ ہم اپنے ساتھیوں کو سمجھا رہے تھے کہ...

وہ قرض جو واجب تھے

قوم کتنی مقروض ہے یہ سب کو معلوم ہے، لیکن ہم پر قارئین کا قرض چڑھا ہوا ہے اور ہم تو کسی بین الاقوامی...
پرنٹ ورژن
Friday magazine