ڈاکٹر عابدہ سلطانہ کی کتاب کی تقریب ِپذیرائی

منیر عقیل انصاری
ڈاکٹر عابدہ سلطانہ کی تحریر کردہ کتاب ’’عالم اسلام کی جدید تحریکیں‘‘ کی تقریب پذیرائی کریسنٹ آڈیٹوریم گلشن اقبال میں منعقد ہوئی۔ اس تقریب کے مہمانِ خصوصی سابق امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن تھے، جبکہ دیگر مہمانوں میں معروف کالم نگار، دانشور، سینئر صحافی و شاعر شاہ نواز فاروقی، نائب امیر جماعت اسلامی کراچی ڈاکٹر اسامہ رضی، ڈاکٹر حسام الدین منصوری، ڈاکٹر جہاں آرا لطفی اور ڈاکٹر محمد بلال شامل تھے۔ تقریب میں میزبانی کے فرائض ڈاکٹر محمد بلال نے انجام دیئے۔ اس علمی و ادبی تقریب میں صحافت، شعر و ادب اور دیگر شعبوں سے تعلق رکھنے والی نمایاں شخصیات موجود تھیں۔
تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق امیر جماعت اسلامی پاکستان سید منور حسن نے کہا کہ اس طرح کے موضوعات پر اب کم کتابیں لکھی جارہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی تحریک کے کرنے کا بنیادی کام ہی اقامتِ دین ہے، دنیا میں اسلامی تحریکیں زیر بحث ہیں جو خوش آئند بات ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ آج کے دور میں بھی لوگ اپنے حصے کا کام کررہے ہیں، اور اس طرح کے موضوع پر کتاب لکھنا وقت کی ضرورت ہے۔ آج پوری دنیا اسلامی تحریکوں سے سوالات کررہی ہے، ہمیں ان سوالوں کے صحیح جواب کے لیے اپنے آپ کو تیار کرنے کی ضرورت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ یہ بھی حقیقت ہے کہ ہماری جانب سے مثبت تجزیے اور تحریریںکم آرہی ہیں، ہمیں اقامتِ دین کا کام اپنے اپنے دائرے میں کر نے کی ضرورت ہے کیونکہ اسلامی تحریکوں کے کرنے کا بنیادی کام ہی اقامتِ دین ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں جامعات میں پڑھنے والے طلبہ کو اس کے لیے تیار کرنا چاہیے، اور بہت سے افراد یہ کام کررہے ہیں، اگر طلبہ میں لکھنے اور پڑھنے کا جذبہ پیدا ہوگا تو اچھا معاشرہ تشکیل پائے گا، معاشرے میں مثبت موضوعات زیر بحث آئیں گے۔ نائب امیر جماعت اسلامی کراچی ڈاکٹر اسامہ رضی نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ یہ کتاب تعصب سے پاک اور گزشتہ صدی کی تمام اہم تحریکوں کا احاطہ کرتی ہے جو ہر تحریکی فرد کی لائبریری میں ہونی چاہیے۔ معروف کالم نگار اور دانشور شاہ نواز فاروقی نے کتاب کا بھرپور علمی و تنقیدی جائزہ پیش کیا اور اگلے ایڈیشن میں علامہ اقبال اور اکبر الٰہ آبادی کی شخصیات کے کارناموں کا بھی احاطہ کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ ڈاکٹر جہاں آرا لطفی نے کتاب کو گراں قدر سرمایہ قرار دیا اور جمال الدین افغانی اور اسماعیل راجحی کی تحاریک کے تذکرے کو بے حد سراہا۔ کتاب کی تقریب پذیرائی میں شریک مہمانوں سید منور حسن، ڈاکٹر اسامہ رضی، شاہ نواز فاروقی، پروفیسر سلیم مغل، عائشہ منور صاحبہ، تحسین فاطمہ صاحبہ، امت الرقیب صاحبہ اور مبین طاہرہ صاحبہ کو اعزازی شیلڈز پیش کی گئیں۔آخر میں کتاب کی مصنفہ ڈاکٹر عابدہ سلطانہ نے تقریب میں شریک مہمانوں کا شکر یہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ میں تمام لوگوں کی انتہائی مشکور ہوں جنہوں نے میری چھوٹی سی تقریب کو چار چاند لگادیے۔ پروگرام کا اختتام پروفیسر حسام الدین منصوری کی دعا پر ہوا۔