زبان زد اشعار

Print Friendly, PDF & Email

بیشتر خدا پایا اور برملا پایا
ہم نے تیرے بندوں کو تجھ سے بھی سوا پایا
(سید ذوالفقار علی بخاری)
……٭٭٭……
بارش کو دشمنی تھی فقط میری ذات سے
جونہی مرا مکان گرا ابر چھٹ گیا
(تنویر سپرا)
……٭٭٭……
بھنور میں نائو کنارے پہ ناخدا دیکھا
یہ واقعہ مری آنکھوں نے بارہا دیکھا
(ڈاکٹر انعام الحق جاوید)
……٭٭٭……
بھوک چہرے پہ لیے چاند سے پیارے بچے
بیچتے پھرتے ہیں گلیوں میں غبارے بچے
(بیدل حیدری)
……٭٭٭……
بھرے ہیں آنکھ میں آنسو اداس بیٹھے ہو
یہ کس غریب کی تربت کے پاس بیٹھے ہو
(تعشق لکھنوی)

Share this: