کورونا وائرس کے خلاف ایک اور ویکسین 90 فیصد سے زیادہ مؤثر

امریکہ کے ایک اور نجی ادارے ’’نووا ویکس‘‘ نے اعلان کیا ہے کہ اس کی تیار کردہ کورونا ویکسین وسیع پیمانے کی طبّی آزمائشوں میں 90 فیصد سے بھی زیادہ مؤثر ثابت ہوئی ہے۔
تیسرے مرحلے کی یہ طبّی آزمائشیں (فیز 3 کلینکل ٹرائلز) امریکہ اور میکسیکو کے تقریباً 30 ہزار شہریوں پر کی گئیں۔
اِن آزمائشوں کے دوران معلوم ہوا کہ ویکسین کورونا کی نئی اقسام کے خلاف بھی مؤثر ہے جن میں بی 1.1.7 بھی شامل ہے۔
اب نووا ویکس نے غذاؤں اور ادویہ سے متعلق مرکزی امریکی ادارے ’’ایف ڈی اے‘‘ سے اس ویکسین کے وسیع پیمانے پر استعمال کی ہنگامی اجازت حاصل کرنے کی کوششیں شروع کردی ہیں۔
کمپنی کا کہنا ہے کہ اگر یہ منظوری بروقت مل گئی تو پورے امریکہ میں اس ویکسین کی فراہمی بھی جولائی یا اگست 2021ء سے شروع کردی جائے گی۔ واضح رہے کہ اب تک دنیا بھر میں کورونا وائرس کی 17 ویکسین منظور ہوچکی ہیں، جبکہ مزید 35 ویکسین طبّی آزمائشوں کے تیسرے یعنی آخری مرحلے (فیز تھری کلینکل ٹرائلز) میں ہیں۔ ان کے علاوہ کورونا وائرس کی مزید 48 ویکسین دوسرے مرحلے کی طبّی آزمائشوں میں، جبکہ 35 ویکسین پہلے مرحلے کی طبّی آزمائشوں میں جانچی جارہی ہیں۔