زبان زد اشعار

Print Friendly, PDF & Email

دفعتاً ترکِ تعلق میں بھی رسوائی ہے
الجھے دامن کو چھڑاتے نہیں جھٹکا دے کر
(آرزو لکھنوی)
……٭٭٭……
دیوارِ خستگی ہوں، مجھے ہاتھ مت لگا
میں گر پڑوں گا، دیکھ، مجھے آسرا نہ دے
(اسلم انصاری)
……٭٭٭……
دھڑکتے دل کی صدا بھی عجیب شے ہے ظفرؔ
کہ جیسے کوئی مرے ساتھ ساتھ چلتا ہو
(یوسف ظفر)
……٭٭٭……
درِ قفس جو کھلا، آسمان بھول گئے
رہا ہوئے تو پرندے اُڑان بھول گئے
(اقبال ساجد)

Share this: