کتے کی قابل تقلید 10 خصلتیں

Print Friendly, PDF & Email

خواجہ حسن بصریؒ فرماتے ہیں کہ کتے میں 10 ایسی خصلتیں ہیں کہ وہ ہر مومن کو اختیار کرنی چاہئیں:
:1 وہ بھوکا رہتا ہے، یہ آداب صالحین سے ہے، تھوڑی چیز پر قناعت کرتا ہے، یہ علامت صابرین ہے۔
:2 اس کا کوئی مکان نہیں ہوتا، یہ علامت متوکلین ہے۔
:3 وہ رات کو بہت کم سوتا ہے، یہ صفت شب بیداراں اور علامت محبین ہے۔
:4 جب مرتا ہے تو کوئی میراث نہیں چھوڑتا، یہ صفت زاہدین سے ہے۔
:5 یہ اپنے مالک کو نہیں چھوڑتا گو وہ اس پر سختی کرے اور اس کو مارے، یہ علامت مریدان صادقین سے ہے۔
:6 ادنیٰ جگہ پر ہی راضی ہوجاتا ہے، یہ صفت متواضعین سے ہے۔
:7 اس کی جائے رہائش پر کوئی قبضہ کرلے تو اس کو چھوڑ دیتا ہے اور دوسری جگہ چلا جاتا ہے، یہ نشان راضیین سے ہے۔
:8 اس کو ماریں اور پھر روٹی کا ٹکڑا ڈالیں تو فوراً آجاتا ہے، مار کا کینہ نہیں رکھتا، یہ علامت خاشعین سے ہے۔
:9 کھانا سامنے رکھا ہوا دیکھتا ہے تو دور بیٹھا ہوا تکتا ہے، یہ علامت مساکین سے ہے۔
:10 کسی مکان سے کوچ کر جاتا ہے تو پھر اس کی طرف التفات نہیں کرتا، یہ علامت مخرونین سے ہے۔
قناعت کا سبق کتے سے حاصل کر۔ تو نے اکثر دیکھا ہوگا کہ شکاری کتوں کو جب گلی کوچوں کے کتے دیکھتے ہیں تو ان پر بھونکتے ہیں اور کہتے ہیں کہ ’’اے مسکینو! جب تم نے عمدہ عمدہ اور لذیذ کھانے کی طرف رغبت کی تو تم زنجیروں کے ساتھ قید کرلیے گئے۔اگر تم بھی گری پڑی اور روکھی سوکھی چیزوں پر قناعت کرلیتے تو ہماری طرح کھلی اور آزاد زندگی بسر کرتے‘‘۔
(ماہنامہ چشم بیدار۔فروری 2021ء)

Share this: